زیارت عاشورا میں سو لعن اور سو سلام پڑھنے کے طریقه کی سند کیا هے؟

بعض علماء کا اعتقاد هے که زیارت عاشورا میں سو{۱۰۰}لعن اور سو{۱۰۰} سلام پڑھنے میں ان کا آخری حصه کافی هے اور پورے متن کو پڑھنے کی ضرورت نهیں هے اگر یه جمله هھی صحیح هے تو مهربانی کر کے اس کی سند بیان کیجئیے، شکریه؛

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More