فرشتے جناب مريم سے باتيں كرتے ہيں

0 0

جناب مريم (ع) كى ايك بلند فضيلت يہ تھى كہ فرشتے ان سے باتيں كيا كرتے تھے جس سے آپ (ع) كى عظمت واضح ہوجاتى ہے.

”فرشتے حضرت مريم (ع) كو بشارت ديتے ہيں كہ خدا نے انہيں برگزيدہ كيا اور چن ليا ہے اور انہيں پاك قرار ديا”_

يعنى تقوى ، پرہيزگاري، ايمان اور عبادت كے نتيجے ميں وہ خدا كے برگزيدہ اور پاك لوگوں ميں سے ہوگئي ہيں اور انہيں حضرت عيسى عليہ السلام جيسے پيغمبر كى پيدائشے كے لئے چن ليا گيا ہے_

پہلا حصہ جناب مريم (ع) كى اعلى انسانى صفات كى طرف اشارہ كرتا ہے اور برگزيدہ انسان كے طور پراپ كانام ليتا ہے اور دوسرے حصے ميں”اصطفك” ان كے اپنے زمانے كى تمام عورتوں پر برترى كى طرف اشارہ ہے_

يہ قرآنى گفتگو اس بات پر گواہ ہے كہ حضرت مريم (ع) اپنے زمانے ميں عظيم ترين منزلت كى مالك خاتون تھيں_

يہ امر بانوئے اسلام حضرت فاطمہ زہراسلام اللہ عليہا كے بارے ميں منقول ان روايات كى نفى نہيں كرتا جن ميں ان كے لئے فرمايا گيا ہے كہ آپ (ع) تمام جہانوں كى عورتوں سے برتر اور افضل ہيں كيونكہ متعدد روايات ميں پيغمبر اسلام (ص) اور امام جعفر صادق عليہ السلام سے منقول ہے:

”جناب مريم (ع) تو اپنے زمانے كى عورتوں كى سردار تھي، ليكن جناب فاطمہ زہرا سلام اللہ عليہا اولين و آخرين تمام زمانوں كى عورتوں كى سردار ہيں”_

قرآن ميں حضرت مريم (ع) سے فرشتوں كى گفتگو كى تفصيل بيان كى گئي ہے_ انہو ں نے حضرت مريم (ع) كو خدا كى طرف سے برگزيدہ ہونے كى بشارت دينے كے بعد كہا: ”اب پروردگار كے حضور خضوع كرو اور سجدہ و قيام بجالائو”_

مزید  عزاداری اور حضرت آیت اللہ سیستانی کی راہنمائی

يہ درحقيقت اس عظيم نعمت پر شكرانہ تھا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.