2022 - 11 - 27 ساعت :
اخلاقیات اور تعلیم

خدا کی عطاکردہ نعمت

2020-12-20 070

نعمت خدا کی طرف سے ہمارے لئے ایک تحفہ ہے جس کے ملنے پر ہمیں خدا کا شکر ادا کرنا چاہئے۔

بسم اللہ الرحمن الرحیم
خداوند متعال نے جو نعمتیں ہمیں عطاء کی ہیں اگر ہم ان کو خدا کی طرف سے ایک امانت سمجھیں تو نہ اس کے ملنے پر ہمیں خوشی ہوگی اور نہ اس کے نہ ملنے پر ہمیں افسوس ہوگا، اگر ہم اس فکر سے نعمت کو دیکھیںگے تو اس وقت ہم نعمت کے بارے میں یہ سوچیں گے کہ یہ خدا کی جانب سے ہمارے لئے ایک ہدیہ تھا جو ہم سے واپس لے لیا گیا۔
خداوند متعال نعمت کے ذریعہ ہماری تربیت کرنا چاہ رہا ہے کہ جو خدا تمہیں عطاء کرے اس پر راضی ہوجاؤ اور جس چیز سے منع کرے اس سے رک جاؤ جس کی طرف قرآن مجید کی یہ آیت اشارہ کر رہی ہے: «وَ مَا كَانَ لِمُؤْمِنٍ وَ لَا مُؤْمِنَةٍ إِذَا قَضَى اللَّهُ وَ رَسُولُهُ أَمْرًا أَنْ يَكُونَ لَهُمُ الْخِيَرَةُ مِنْ أَمْرِهِمْ …[سورۂ احزاب، آیت:۳۶] اور کسی مومن مرد یا عورت کو اختیار نہیں ہے کہ جب خدا و رسول کسی امر کے بارے میں فیصلہ کردیں تو وہ بھی اپنے امر کے بارے میں صاحبِ اختیار بن جائے».

  •      نعمت کو خدا کی جانب سے ایک تحفہ سمجھنے کا نتیجہ یہ ہوگا کہ انسان کبھی بھی کسی بھی نعمت کے چلے جانے پر غمیگین نہیں ہوگا اور اس کے ملنے پر بہت زیادہ خوشی کا اظھار نہیں کریگا، خداوند متعال ہم سب کو اس کی عطا کی ہوئی نعمتوں کا شکر ادا کرنے کی توفیق عطا فرمائے۔

شجاعت علی

Loading...
  • ×
    ورود / عضویت