قرآن میں وقت کی اہمیت کا ذکر

0 0

بےشک انسان کے پاس سب سے نفیس ترین اور سب سے قیمتی چیز وقت ہی ہے ۔  ہم اپنے عمل اور کوشش سے جو بھی حاصل کرنا چاہیں  اس کی کامیابی کا راز  وقت کے  درست استعمال میں ہی پوشیدہ ہے ۔ یہ وقت افراد اور جامعہ دونوں کے لیۓ ایک حقیقی سرمایہ ہے ۔

وقت کی اہمیت  کا اندازہ ہم اس سے لگا سکتے ہیں کہ خدا تعالی نے مقدس کتاب قرآن کریم کی ایک سورہ مبارکہ کا نام ” العصر ” یعنی زمان یا وقت  رکھا  اور قرآن میں اور بھی  جگہوں پر وقت کی قدر  کا ذکر ملتا ہے ۔ 

حدیث نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ہے کہ:

” قیامت کے دن انسان کی عمر سے عام طور پر اور اس کی جوانی  کے متعلق خاص طور پر پوچھا جاۓ گا کہ یہ کس راستے میں گزاری گئی ۔ “

 ایک اور جگہ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم فرماتے ہیں کہ :

” اس سے پہلے کہ مصروف ہو جاؤ فرصت کو غنیمت جانو “

یہ مختصر طور پر بیان کی گئی باتیں وقت کی اہمیت کو ہی تو ظاہر کر رہی ہیں ۔  اس لیۓ یہ ہماری ذمہ داری بنتی ہے کہ خود کو منظم کرتے ہوۓ وقت کا صحیح  استعمال کریں ۔

وقت کی خصوصیات

٭ وقت بڑی تیزی کے ساتھ گزر جاتا ہے ۔  وقت  ایک تند و تیز ہوا کی مانند ہے جو بادل کی طرح تیزی کے ساتھ گزر جاتا ہے ۔  کبھی یہ خوشی کے ساتھ گزرتا ہے تو کبھی غم کے ساتھ  ۔ (نازعات/ یونس)

مزید  علامہ طبرسی مفسِّرین کے لئے نمونۂ عمل

٭ وقت کبھی لوٹ کر  نہیں آتا ہے  ۔

٭ انسان کے ہاتھ میں سب سے زیادہ قیمتی چیز وقت کی صورت میں ہی ہے ۔

ہم پر لازم ہے کہ وقت کی ان خصوصیات کو درک کرتے ہوۓ ان کو اپنی زندگی کا کامیابی کے ساتھ حصّہ بنائیں  ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.