فرشتوں کے ہم نشین بن جاؤ(۱)

0 0

ہم سب کی یہ شدید خواہش ہوتی ہے کہ زندگی کے مصائب اور مشکلات میں کوئی غیبی مدد ہم تک پہنچے اور ہمیں مصیبت سے نجات دلاۓ ۔

کیا اس خواہش کے حصول کا کوئی راستہ موجود ہے ؟

قرآن مجید کی نورانی آیات اس سوال  کا جواب مثبت دیتی ہیں لیکن کچھ شرائط کے ساتھ ۔ اب وہ کون سی شرائط ہیں جن   پر عمل کرنے کے بعد ہم ملائکہ کی یاری حاصل کر پاتے ہیں ۔ یہ شرائط مندرجہ ذیل ہیں ۔

1۔ ایمان

اللہ تعالی کے حکم سے فرشتے مومن لوگوں کی خدمت میں حاضر ہوتے ہیں اور ان کی مدد کرتے ہیں ۔ اس بات کو سمجھنے کے لیۓ ہم سورہ آل عمران کی آیت نمبر 124 سے رہنمائی لیتے ہیں جس میں ذکر ہے کہ

«اِذ تَقولُ لِلمؤمنین ألَن یَکفِیَکُم أن یُمِدَّکُم رَبُّکُم به ثلاثه آلافٍ مِنَ الملائکهِ مُنزَلین»

جب آپ مومنین سے کہہ رہے تھے: کیا تمہارے لیے کافی نہیں ہے کہ تمہارا پروردگار تین ہزار فرشتے نازل فرما کر تمہاری مدد کرے ؟

 مندرجہ بالا ذکر شدہ آیات کے  بعد  اللہ تعالی  مزید فرماتا ہے کہ اس بات کا  خیال رہے کہ فرشتوں کا تمہاری مدد کے لیۓ آنا صرف تمہاری حوصلہ افزائی ، بشارت ، اطمینان  اور روح کی تقویت کے لیۓ ہے وگرنہ کامیابی  تو صرف خدا کی طرف سے ہی نصیب ہونی ہوتی ہے جو ہر چیز پر قادر  ہے اور حکمت والا ہے ۔  

مزید  حج کا سياسي پھلو
جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.