تذکرہ موت قرآن ميں

0 0

کُلُّ مَنْ عَلَيْھَافَانٍ وَّ يَبْقٰي وَجْہُ رَبِّکَ ذُوالْجَلَالِ وَالْاِکْرَامِ- جو کوئي زمين ميں ہے فنا ہونے والا ہے اور باقي رہے گي ذات تيرے رب کي بزرگي اور عظمت والي- کُلُّ نَفْسٍ ذَائِقَةُ الْمَوْتٍ کُلُّ شَيْئيٍ ھَ

کُلُّ مَنْ عَلَيْھَافَانٍ وَّ يَبْقٰي وَجْہُ رَبِّکَ ذُوالْجَلَالِ وَالْاِکْرَامِ-

جو کوئي زمين ميں ہے فنا ہونے والا ہے اور باقي رہے گي ذات تيرے رب کي بزرگي اور عظمت والي-

کُلُّ نَفْسٍ ذَائِقَةُ الْمَوْتٍ کُلُّ شَيْئيٍ ھَالِک اِلَّا وَجْھَہُ-

ہر جي کو موت چکھني ہے- ہر چيز فنا ہونے والي ہے مگر اس کي ذات-

اَيْنَ مَاتَکُوْنُوْايُدْرِکُکُّمُ الْمَوْتُ وَلَوْکُنْتُمْ فِيْ بُرَوْجٍ مَّشَيَّدَةٍ-

جہان کہيں بھي تم ہوئے موت تم کو آ پکڑے گي- اگرچہ تم مضبوط قلعوں ميں ہو-

خَلَقَ الْمَوْتَ وَالْحَيَوٰةَ لِيَبْلَوْکُمْ اَيُّکُمْ اَحْسَنَ عَمَلاً-

موت و حيات کو پيدا کيا- تاکہ جانچے تم ميں کون اچھا کام کرتا ہے-

قُلْ اِنَّ صَلاَ تِيْ وَنَسَکِيْ وَمَحْيَايَ وَمَمَاتِيْ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِيْنَ-

تو کہہ ميري نماز  ميري قرباني  ميرا جينا  ميرا مرنا اللہ ہي کے لئے ہے جو سارے جہان کا پالنے والا ہے-

قُلْ اِنَّ الْمَوْتَ الَّذِيْ تَفِرُّوْنَ مِنْہُ فِاِنَّہُ مُلٰقِيْکُمْ –

تو کہہ موت جس سے تم بھاگتے ہو- وہ ضرور تم کو ملنے والي ہے-

مزید  امت میں اختلاف رحمة للعالمین(ص) کو ناپسند
جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.