امام حسین(علیہ السلام) کی نظر میں کونسا بندہ خدا کے غضب سے امان میں ہے

بسم اللہ الرحمن الرحیم     جب خداوند عالم کسی بندہ سے راضی ہوتا ہے تو یقینا وہ بندہ خدا کے غضب سے امان میں رہتا ہے کیونکہ جو اللہ کے لئے ہر کام کو انجام دیتا ہے خدا اس سے راضی ہوتا ہے اور جس بندہ سے خدا راضی رہتا ہے، خدا اس بندہ پر اپنا غضب نازل نہیں کرتا جیسا کہ امام حسین(علیہ السلام) ارشادفرمارہے ہیں: «مَنْ طَلَبَ رِضَا اللَهِ بِسَخَطِ النَّاسِ كَفَاهُ اللَهُ أُمُورَ النَّاسِ؛ وَ مَنْ طَلَبَ رِضَا النَّاسِ بِسَخَطِ اللَهِ ‏وَكَلَهُ اللَهُ إلَى النَّاسِ[ بحارالانوار،ج۶۸،ص۲۰۸] جو کوئی خدا کی رضا کو چاہتا ہے اگرچہ لوگ اس سے ناراض ہوں، خداوند عالم اسے لوگوں سے بے نیاز کردیتا ہے اور جو شخص لوگوں کی رضایت کو حاصل کرنے کے درپے رہتا ہے، خداوند عالم اسے لوگوں کے سپرد کردیتا ہے».     انسان کو چاہئے کہ وہ ہمیشہ خدا کی رضا حاصل کرنے کے درپے رہے تا کہ خدا کے غضب کا شکار نہ ہو۔*بحارالانوار،  محمد باقر مجلسی، دار احیاءالتراث العربی، ج۶۸،ص۲۰۸​​​​​، ۱۴۰۳​​۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

16 + 19 =

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More