رہبر معظم کی عمار فلم کے عوامی فسٹیول کے بعض اہلکاروں اور حکام سے ملاقات

رہبر معظم کی عمار فلم کے عوامی فسٹیول کے بعض اہلکاروں اور حکام سے ملاقات

رہبر معظم کی عمار فلم کے عوامی فسٹیول کے بعض اہلکاروں اور حکام سے ملاقات

۲۰۱۳/۰۲/۱۹ – رہبر معظم انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ العظمی خامنہ ای نے عمار فلم کے عوامی فسٹیول کے بعض اہلکاروں اور حکام کے ساتھ ملاقات میں اس فسٹیول میں دین اور دینی معارف نیز اسی طرح انقلاب اسلامی اور اس کے اہداف و اقدار کے موضوع پر توجہ کو ایک مبارک اقدام قراردیتے ہوئے فرمایا: اسلامی ہنر اور دینی سنیما پر دراز مدت ، دقیق ، امید افزا مستقبل اوراس ہنر کے زیادہ سے زیادہ اثرات مرتب کرنے کے پیش نظر توجہ مرکوز ہونی چاہیے ۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے عمار فلم کے عوامی فسٹیول کے انعقاد پر مسرت اور خوشی کا اظہار کیا اور پیغمبر اسلام (ص) کے بزرگ صحابی اور حضرت علی (ع) کے باوفا ساتھی حضرت عمار کے نام کے انتخاب کو بہترین اور پسندیدہ ترین انتخاب قراردیا اور اس بزرگ و عظیم صحابی کی ممتاز اور نمایاں خصوصیات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے فرمایا: صدر اسلام کے مختلف واقعات اور گوناگوں حوادث میں حضرت عمار کی استقامت اور پائداری، اسی طرح پیغمبر اسلام (ص) کی رحلت کے بعد سخت امتحانات،موقع شناسی، بروقت حضوراور حضرت علی (ع) کے دورکے حوادث اور مسائل میں ان کے فیصلہ کن اقدامات ان کی بارز اور ممتاز خصوصیات میں شمار ہوتے ہیں۔

رہبرمعظم انقلاب اسلامی نے انقلاب اسلامی کے اہداف و اقدار کے سلسلے میں مستقبل پر امید افزا نگاہ اور بلند افق پر نگاہ ڈالنے کو بہت ہی اہم قراردیتے ہوئے فرمایا: سن 1357 میں انقلاب اسلامی کی کامیابی کے ساتھ شاندار حرکت کا آغاز ہوا اور گذشتہ 34 برسوں میں امریکہ کی طاقت و سطوت کے طلسم ٹوٹنے اور مختلف حوادث میں کامیابی درحقیقت انقلاب اسلامی کےاعلی اہداف تک پہنچنے کے سلسلے میں مقدماتی اور ابتدائی گام ہیں، لہذا ہمت ، دوچنداں تلاش و کوشش ، دشمن سے خوف نہ کھانے اور اس کی سازشوں سےمرعوب نہ ہونے اور مایوسی اور باہمی اختلاف سے پرہیز کے ساتھ ترقی اور پیشرفت کی بلند چوٹیوں کی سمت حرکت جاری رکھنی چاہیے۔

رہبر معظم کی عمار فلم کے عوامی فسٹیول کے بعض اہلکاروں اور حکام سے ملاقات

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے دینی سنیما اور اسلامی ہنر میں اس قسم کے نقطہ نگاہ کو ضروری قراردیتے ہوئے فرمایا: اس میدان میں مؤمن، شاداب،نئی نظر اور بلند ہمت والے جوان آگے کی سمت حرکت کے لئے محرک انجمن ہیں اور ممتازشخصیات و دانشور افراد کو چاہیے کہ وہ اپنے تجربات نئی نسل کو منتقل کرکے اور نئے اور کارآمد افراد کی تربیت کرکے اس حرکت میں مزید سرعت بخشیں ۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے مغربی فن سنیما کے پیش نظر ، منصوبہ بندی، جوانوں کی فکری بالیدگیاور نشو ونما کے لئے فکری اطاق کی تشکیل، اسلامی ہنراور دینی سنیما کے شعبہ میں نئی صلاحیتوں اور اسی طرح اس میدان میں دیندار ، انقلابی ، ماہر اور باتجربہ افراد کے وارد ہونے پر تاکید کی۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے سنیما کے شعبہ میں انقلابی اور متدین افراد کے مؤثر ورود کےساتھ سنیما میں موجود ماحول و فضا سے ان کے متاثر نہ ہونے کو اصلی شرط قراردیتے ہوئے فرمایا: اس ماحول سے محفوظ رہنے کے لئےاللہ تعالی کے ساتھ مسلسل رابطہ ، تضرع و زاری اور نوافل بجا لانا بہت ضروری ہےجیسا کہ حضرت عمار نے بھی اپنے آپ کو اسی طریقہ سے مضبوط و مستحکم اور محفوظ بنالیا تھا۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے فرمایا: اللہ تعالی پر توجہ، ذکر و عبادت سب سے بلند و بالا اور لذت بخش ہنر ہے۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے سنیما کی فضا اور ملک کے ذرائع ابلاغ کے مؤثر ہونے میں متعلقہ یونیورسٹی اور حکام کے نقش و کردار کو بہت ہی اہم قراردیتے ہوئے فرمایا: اس میدان میں اصلاح کے لئے اس میں وارد ہونے کی ابتدائی راہوں کی اصلاح ضروری ہے۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ العظمی خامنہ ای نے فرمایا: جو لوگ آج انقلابی اور دفاع مقدس کے موضوعات اور مضامین کے حوالے سے فلمی میدان میں سرگرم عمل ہیں وہ در حقیقت جہاد میں مشغول ہیں۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے مضبوط و قوی فلم نامہ ، داستان اور قصہ سے استفادہ کو فلم سازی کے بنیادی اور اساسی ضروریات قراردیتے ہوئے فرمایا: ملک میں داستان نویسی اور ناول نویسی کا مطلوب مقام تک پہنچنے میں ابھی بہت زیادہ فاصلہ ہے اور اس شعبے کو مضبوط بنانے پر توجہ مرکوز کرنی چاہیے۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے فلم بنانے کے لئے تاریخ انقلاب اسلامی، دفاع مقدس، فلسطین اور اسلامی بیداری کو اہم اور مفید موضوعات قراردیتے ہوئے فرمایا: دنیا میں ایک جھوٹا پروپیگندہ یہ کیا جارہا ہے کہ ہنر کو سیاست کے ساتھ نہیں ملانا چاہیے جبکہ مغربی ممالک میں ہالیوڈ سمیت تمام ہنری مجموعہ مکمل طور پرسیاسی ہیں اوراگرایسانہ ہوتا تو پھر وہ کیوں سنیمائی فسٹیول میں ان ایرانی فلموں کو شرکت کی اجازت نہیں دیتے جو صہیونیوں کے خلاف ہیں؟

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے فرمایا: ایران کے خلاف سیاسی فلموں کی ساخت اور ایران کے خلاف بننے والی فلموں کو انعامات سے نوازاجانا درحقیقت امریکہ اور مغرب میں ہنر اور سیاست کے باہمی امتزاج کا واضح نمونہ ہے۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے اس نشست میں انسانی علوم ، ہنر اور سنیما سے متعلق اور انسانی علوم میں تحول کے بارے میں پیش کئےگئے مطالب کی طرف اشارہ کرتے ہوئے فرمایا: انسانی علوم ملک کے ممتاز مجموعہ کے سانس لینے کی ہوا کے مانند ہے جس کے دوش پر معاشرے کی ہدایت ورہنمائی ہے لہذا سانس لینے کی ہوا کے آلودہ یا پاک ہونے کا بہت ہی اہم اور فیصلہ کن نقش ہے۔

رہبر معظم کی عمار فلم کے عوامی فسٹیول کے بعض اہلکاروں اور حکام سے ملاقات

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے مغربی ممالک میں انسانی علوم کی سب سے بڑی مشکل کو اس کےغلط بنیادوں پر استوار ہونا قراردیتے ہوئے فرمایا: مغربی انسانی علوم میں بنیادی اصلاح وتحول کےبغیر ٹی وی اورسنیما میں تحول اور انسانی علوم میں اصلاح ممکن نہیں ہے اور بنیادی اصلاح کے لئےعلماء اور حوزات علمیہ کے ساتھ مؤثر رابطہ ضروری ہے۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے دین اور انقلاب کے ساتھ والہانہ محبت رکھنے والے سنیمائی گروہوں کو اختلافات سے دور رہنے کی سفارش کرتے ہوئے فرمایا: ممکن ہے سنیما میں سرگرم دین اور انقلاب سے محبت رکھنے والے افراد مختلف سلیقوں کے حامل ہوں لیکن انھیں اصلی اور بنیادی کاموں پر اپنی ہمت اور توجہ مرکوز کرنی چاہیے۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی کے خطاب سے قبل عمارفلم فسٹیول کے منتخب اور ججزحضرات، وحیدی جلیلی، نادر طالب زادہ، حسن عباسی، مہدی نصیری، سید جمال عود سیمین، ابو القاسم طالبی،فرج اللہ سلحشور، محمد صادق باطنی،ابراہیم فیاض، سعید قاسمی اور مصطفی رضوانی نے مندرجہ ذیل نکات پیش کئے:

٭ پیداوار سے لیکر نمائش کے مرحلے تک ہنربالخصوص سنیما کوعوامی کرنے اورانحصار سے خارج کرنے پر تاکید

٭ انقلاب اسلامی کے اہداف کے پیش نظر کھوئی ہوئی ظرفیتوں کو فعال اور مضبوط بنانے پر تاکید

٭ انقلابی اور دینی خدشات کو منتقل کرنے کے لئے سنیما سے استفادہ کرنے پر تاکید

٭ خطرات سے محفوظ رہنے کے لئے مذہبی فلم سازوں کے عقائدکو مضبوط بنانے پر تاکید

٭ ملک کے طویل منصوبوں اور پالیسیوں کی تنظیم و ترتیب میں ذرائع ابلاغ اور سنیما کے نقش پر تاکید

٭ امید افزا مستقبل کے لئے منصوبہ بندی اور سنیما پر سطحی نگاہ ڈالنے سے پرہیزکرنےپر تاکید

٭ سنیما کے شعبے میں خط شکن اور جوان افراد کی تربیت کے منصوبہ پر تاکید

تبصرے
Loading...