حائل دیوار کے خلاف مظاہرے

0 5

غاصب اسرائيل فوجيوں نے حائل ديوار کي تعمير کے خلاف احتجاج کرنے والوں کو دم گھوٹنے والي گيس کے گولوں اور ربر کي گوليوں سے نشانہ بنايا ہے-

فلسطيني ذرائع کے مطابق امن کارکنوں اور فلسطيني شہريوں کي ايک بڑي تعداد نے غرب اردن کے علاقے ميں کئي مقامات پر حائل ديوار اور غير قانوني صيہوني بستيوں کي تعمير کے خلاف مظاہرے کئے-

غاضب اسرائيل فوجيوں نے پرامن مظاہرين پر آنسوں گيس کے گولے پھينکے اور ربر کي گوليوں کا آزادانہ استعمال کيا جسکے نتيجے ميں متعدد مظاہرين زخمي ہوگئے-

مظاہرين فلسينيوں کے درميان اتحاد کے حق ميں نعرے لگا رہے تھے –

مظاہرين نے اپنے ہاتھوں ميں فلسطين کے پرچم اٹھا رکھے تھے اور وہ اسرائيلي جيلوں ميں بند فلسطيني قيديوں کي رہائي کا مطالبہ کر رہے تھے-

مظاہروں کے آرگنائيزر کا کہنا ہے کہ گرمي کي شدت اور روزے کے باجود اتني بڑي تعداد ميں لوگوں کا مظاہروں ميں شرکت کرنا اسرائيلی قبضے کے خاتمے کے لئے انکے عزم کي علامت ہے-

مظاہرين کي جانب سے ايک بيان بھي جاري کيا گيا ہے جس ميں رمضان کے مہينے ميں اسرائيلي مصنوعات اور غذائي اشيا کے بائيکاٹ کي اپيل کي گئي ہے-

مزید  عراق میں قومی اتحاد کے قیام کےلئے آیۃ اللہ سیستانی کی تلقین
جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.