ایران کے خلاف فوجی اقدام اسرائیل کو تباہ کردے گا

صہیونی حکومت کے اعلی فوجی اور سیاسی حکام نے اس بات کا اعتراف کیا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف کسی بھی جارحانہ اقدام اسرائیل کی تباہی پر منتج ہوگا اور اسی خوف کی بناء پرصہیونی حکومت کے سربراہ نے ایران کے خلاف کسی بھی جارحانہ اقدام کی مخالفت کی ہے –

صہیونی حکومت کے ایک ٹی وی چینل نے آج اعلان کیا کہ “شیمون پریز” صہیونی پارلمنٹ کے بعض اراکین اور اعلی حکام پر مشتمل اس اتحاد کی سربراہی کررہا ہے جو کہ ایران کے ایٹمی تنصیبات پر حملے کے خلاف ہے –

اس ٹی وی رپورٹ کے مطابق پریز نے امریکی وزیر دفاع کے حالیہ دورہ تل ابیب میں بھی ایران کےخلاف فوجی اقدام کو خطرناک قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ ایران پر حملے کے خطرناک نتائج برآمد ہونگے –

ادھر صہیونی اخبار یدیعوت آحارونوت نے بھی اعتراف کیا ہے کہ ایران کے خلاف ممکنہ فوجی اقدام پر صہیونی کابینہ میں شدید اختلافات ہیں –

شائول موفاز صہیونی حکومت کے سابق وزیر جنگ نے بھی کہا ہے کہ ایران کے خلاف فوجی اقدام اسرائیل کے مستقبل کو تباہ کردے گا –

 

 

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.