ہونٹوں کی جنبش

ہونٹوں کی جنبش

شاعر:امید اعظمی

تونے روشن کئے عزم کے آفتاب

تیرے ہونٹوں کی جنبش بنی انقلاب

 تیری تقریر بن کر اجل چھا گئی 

اور طاغوتی قوت کو موت آگئی

تبصرے
Loading...