2022 - 09 - 30 ساعت :
اسلامی انقلاب

اسلامی انقلاب

2020-07-10 09

کتنے غضب کی تھی یہ ہوا انقلاب کی            /               مہلت ہی نہ سنبھلنے کی اس نے کسی کو دی

شاہ کے لئے کہیں نہ رہی پھر پناہ گاه            /               جب تاج کو اڑا کے یہ سر سے گزر گئی

 

خمینی کی صدائے حق کو شاہوں کی یہ تدبیریں            /               یہ طاغوتی عزائم اور یہ باطل کی شمشیریں

بھلا کیسے دبا سکتی ہیں کہ اس کی ہتھیلی پر          /               کچھ ایسی ہیں لکیریں جو ہیں مظلوموں کی تقدیریں

 

آج ان ہاتھوں نے تھامی ہے زمامِ انقلاب               /               ہی جنہیں کامل یقین استحکامِ انقلاب

اس لئے کہ ان کے پرچم پر ہے جو اللہ کا نام              /               در حقیقت وہ ہے اک سندِ دوامِ انقلاب

 

وقت ہے کہ ایک ہوجاؤ بنامِ انقلاب           /               تیز ہو دنیا میں پھر عملِ قیامِ انقلاب

پرچم نصر من اللہ کو اٹھا کر ہاتھ میں            /               سارے مظلوموں کو پہنچا دو پیامِ انقلاب

شجاعت علی

Loading...
  • ×
    ورود / عضویت