کیا وضوء کے بغیر قرآن مجید کی تحریر کو چھونے میں کوئی حرج ھے؟ سھواً چھونے کا کیا حکم ھے؟


کا

3369


ظاہر کرنے کی تاریخ:
2011/04/11


سائٹ کے کوڈ
fa4319


کوڈ پرائیویسی سٹیٹمنٹ
13114

کیا وضوء کے بغیر قرآن مجید کی تحریر کو چھونے میں کوئی حرج ھے؟ سھواً چھونے کا کیا حکم ھے؟

اگر ھم وضوء کے بغیر قرآن مجید کی تحریر پر اس نیت سے که یه ایک علمی کتاب ھے یا داستانیں نقل کرنے کی کتاب ھے ھاتھ لگائیں، مثال کے طور پر حضرت یوسف {ع} کی داستان نقل کرنے والی کتاب کی نیت سے اس پر ھاتھ لگائیں یا اسے ایک علمی اور تاریخی کتاب کے عنوان سے ھاتھ لگائیں، نه قرآن مجید کے عنوان سے تو کیا اس میں کوئی حرج ھے؟ اگر ھم وضوء کے بغیر، سھواً قرآن مجید کو مس کریں تو کیا اس میں کوئی اشکال ھے؟

دیگر زبانوں میں (ق) ترجمہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.