کیا ایسی روایتوں کے بارے میں غلو کرنے والوں اور مفوضه کے توسط سے جعل کا احتمال هے٬ جن کے متن کے بارے میں تواتر کا دعوی کیا گیا هے یا صحیح اسناد سے نقل هوئی هیں؟

0 0


سائٹ کے کوڈ
fa2127


کوڈ پرائیویسی سٹیٹمنٹ
7195

کیا ایسی روایتوں کے بارے میں غلو کرنے والوں اور مفوضه کے توسط سے جعل کا احتمال هے٬ جن کے متن کے بارے میں تواتر کا دعوی کیا گیا هے یا صحیح اسناد سے نقل هوئی هیں؟

جناب کدیور کی تحریوں میں آیا هے که٬ ائمه اطهار (علیهم السلام) کے بارے میں مافوق البشر هونے کے فضائل کے بارے میں روایتوں کے متواتر هونے کا دعوی قابل قبول نهیں هے٬ کیونکه راویوں کا جھوٹا هو نا نه صرف منتفی نهیں هے٬ بلکه بعض مواقع پر ممکن بھی هے ـ ان حالات کے پیش نظر کیا ایسی روایتوں کے بارے میں غلو کرنے والوں اور مفوضه کے توسط سے جعل کا احتمال هے٬ جن کے متن کے بارے میں تواتر کا دعوی کیا گیا هے یا صحیح اسناد سے نقل کی گئی هیں؟

دیگر زبانوں میں (ق) ترجمہ

مزید  بعض اوقات هم عرفا کے درمیان دو قسم کی روشوں کا مشاهده کرتےهیں، مثال کے طور پر بعض عرفا اپنے عرفانى مقامات کو بیان کرتے هیں اور اس مسئله کے بارے میں پروا نهیں کرتےهیں، جیسے محى الدین ابن عربى، اور بعض عرفا اپنے مقامات اور حالات کو پوشیده رکھتے هیں اور حتى که دوسروں کے ذریعه ان کى تشهیر سے بھى ممانعت کرتے هیں، آخر کار ان میں سے کونسى روش اور طریقه کار پسندیده اور صحیح اور معصومین (ع) کى سیرت کےمطابق اور قابل قبول هے؟
تبصرے
Loading...