اگر باطنی یا ظاھری نجاست انسان کے باطن پر سرایت کرے تو کیا اس کا باطن نجس ھوتا ھے؟

0 0


سائٹ کے کوڈ
fa3626


کوڈ پرائیویسی سٹیٹمنٹ
12842

اگر باطنی یا ظاھری نجاست انسان کے باطن پر سرایت کرے تو کیا اس کا باطن نجس ھوتا ھے؟

مھربانی کرکے مندرجه ذیل موارد کے بارے میں طھارت اور نجاست کے فقھی حکم سے ھمیں آگاه فر مائیے:
۱۔ اگر ظاھری نجاست انسان کے باطن تک پحنچ جائے؟
۲۔ اگر باطنی نجاست انسان کے باطن پر سرایت کرے؟
اگر ھاتھ کے مانند کوئی خارجی چیز باطنی نجاست سے باطن میں ملحق ھو جائے؟
۳۔ اگر کوئی ظاھری چیز، ظاھری نجاست کے ساتھ، لیکن منه جیسے باطن میں ملحق ھو جائے؟
۴۔ کیا ناک کے خون کے مانند باطنی نجاستیں نجس ھیں ؟ اس سلسله میں آیت الله مھدی ھادوی تھرانی { دامت برکاته} کا نظریه کیا ھے؟ شکریه!

دیگر زبانوں میں (ق) ترجمہ

مزید  حضرت علی(ع) سے معاویه کی دشمنى کی علت کیا تهی؟
جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.